صفحۂ اول    ہمارے بارے میں    رپورٹر اکاونٹ    ہمارا رابطہ
پیر 30 نومبر 2020 

امریکی موجد نے لوگوں پر ماسک پھینکنے والی گن بنالی

ویب ڈیسک | بدھ 19 اگست 2020 

کورونا وائرس کے دوران سب سے تکلیف دہ لوگوں کا وہ ڈھیٹ رویہ ہے جس کے تحت وہ ماسک لگانے سے انکار کرتے ہیں۔ اب اس کے علاج کے لیے ایک امریکی نے چہرے پر ماسک پھینکنے والی گن بنالی ہے جسے کئی طرح سے آزمایا بھی گیا ہے۔یوٹیوب چینل چلانے والے اور ایک موجد پال ایلن نے ماسک نہ پہننے والے ضدی افراد کا ایک منفرد حل پیش کیا ہے۔ اس کے لیے انہوں نے ایک عجیب و غریب دستی گن بنائی ہے جو براہِ راست لوگوں کے چہرے پر میڈیکل ماسک پھینکتی ہے اور اگر درست انداز سے ماسک فائر کیا جائے تو ماسک چہرے پر جابیٹھتا ہے۔

ایلن نے اس کا عملی مظاہرہ ایک ویڈیو میں بھی کیا ہے اور سب سے پہلےماسک گن کو اپنے آپ پر آزمایا ہے جو سائنس فکشن فلموں جیسی کوئی شے لگتی ہے۔  ایک ویڈیو میں ایلن پال کہہ رہےہیں کہ لوگوں کو کورونا وبا میں ماسک پہننا چاہئے لیکن وہ نہیں پہن رہے۔ اس لیے میں نے ایک دلچسپ ویڈیو میں دکھایا گیا ہے کہ کس طرح ایک مؤثر اور محفوظ طریقے سے لوگوں پر ماسک پھینکے جاسکتے ہیں۔

اس کی وجہ یہ ہے کہ پال کے یوٹیوب چینل پر ان کے لاکھوں صارفین نے ان سے ماسک نہ پہننے والے ہٹ دھرم افراد کی شکایت کرتے ہوئے کوئی حل نکالنے کا مشورہ دیا تو انہوں ںے خود یہ گن تیار کرلی جس پر ماسک کو تنی ہوئی حالت میں رکھا جاتا ہے اور وہ سیدھا چہرے پرپہنچتا ہے اور اطراف کی ڈوریں گھوم کر ماسک کو چہرے پر چپکادیتی ہیں۔ ماسک کے سرے پر مقناطیسی وزن ہیں جو گھوم کر آپس میں چپک جاتے ہیں۔

ایلن پال چاہتے ہیں کہ ماسک گن سے کوئی زخمی نہ ہو اور اسی لیے وہ نشانہ لیتے وقت لیزر سے مدد لیتے ہیں اور اس گن کو بعض افراد نے آزمایا بھی ہے۔

ہمارے بارے میں جاننے کے لئے نیچے دئیے گئے لنکس پر کلک کیجئے۔

ہمارے بارے میں   |   ضابطہ اخلاق   |   اشتہارات   |   ہم سے رابطہ کیجئے
 
© 2020 All Rights of Publications are Reserved by Aksriyat.
Developed by: myk Production
تمام مواد کے جملہ حقوق محفوظ ہیں © 2020 اکثریت۔