صفحۂ اول    ہمارے بارے میں    رپورٹر اکاونٹ    ہمارا رابطہ
منگل 21 مئی 2019 

جب بھلکڑ ماں بچے کو ائیرپورٹ پر بھول کر طیارے پر سوار ہوگئی

اکثریت ڈیسک | منگل 12 مارچ 2019 

ماں اور بچے کا تعلق دنیا میں سب سے زیادہ انمول ہوتا ہے اور کہا جاتا ہے کہ اولاد میں ماں کی جان اٹکی ہوتی ہے۔

مگر کیا ایک ماں اپنے چھوٹے بچے کو کسی ائیرپورٹ میں بھول کر طیارے پر سوار ہوسکتی ہے؟ جی ہاں ایسا ہوسکتا ہے کم از کم سعودی عرب میں تو اس طرح کا واقعہ پیش آیا۔

جدہ میں ایک مسافر طیارے کو واپس ائیرپورٹ اس وقت لوٹنا پڑا جب ماں کو احساس ہوا کہ وہ اپنے بچے کو ائیرپورٹ پر ہی بھول آئی ہے۔

یہ پرواز جدہ سے ملائیشین شہر کوالالمپور کے لیے اڑان بھر چکی تھی مگر پھر اسے کنگ عبدالعزیز ائئیرپورٹ واپس اترنا پڑا کیونکہ بھلکڑ ماں نے مطالبہ کیا تھا کہ وہ اپنے بچے کے پاس جانا چاہتی ہے۔

گلف نیوز کے مطابق جب پرواز دوبارہ ائیرپورٹ پر اترنے لگی تو ائیر کنٹرول آپریٹرز کا ذہن چکرا گیا اور پائلٹوں نے کافی مشکل سے اس عجیب صورتحال کی وضاحت کی۔

ائیر ٹریفک کنٹرولرز سے پائلٹ نے کہا 'خدا ہم پر رحم کریں، کیا ہم واپس آسکتے ہیں یا ہم کیا کریں؟'

اس پر آپریٹرز نے ائیرپورٹ کے عملے سے اس طرح کی صورتحال کے لیے پروٹوکول کے بارے میں پوچھا تاکہ جان سکیں کہ کیا کبھی ماضی میں ایسا ہوا ہے یا نہیں۔

پائلٹ کا کہنا تھا 'یہ پرواز واپسی کی درخواست کرتی ہے، ایک مسافر اپنا بچہ ویٹنگ ایریا میں بھول آئی ہے'۔

اس پر ائیرٹریفک عملے نے پائلٹ سے کہا کہ وہ اپنی کہانی کو دوبارہ دہرائیں جس پر اس نے کہا 'ہم آپ کو بتانا چاہتے ہیں کہ ایک مسافر اپنا بچہ ائیرپورٹ پر بھول آئی ہے اور اب پرواز کا حصہ بننے سے انکار کررہی ہے'۔

ماضی میں ایسی کوئی مثال نہ ملنے پر ائیرکنٹرولرز نے پائلٹ کو کہا کہ واپس آجائیں، یہ ہمارے لیے ایک بالکل نئی چیز ہے۔

اس بھلکڑ ماں اور بچے کے بارے میں کوئی تفصیلات بیان نہیں کی گئیں مگر یہ تو واضح ہے کہ جدہ میں دونوں کا دوبارہ میلاپ ہوگیا تھا۔

ویسے سوشل میڈیا پر کچھ لوگوں نے پائلٹ کے اقدام کو سراہا تو دیگر نے لاپروا ماں کو تنقید کا نشانہ بنایا جبکہ ائیرکنٹرولر اور پائلٹ کے درمیان ویڈیو وائرل ہوگئی جسے اب تک لاکھوں افراد دیکھ چکے ہیں۔

 

ہمارے بارے میں جاننے کے لئے نیچے دئیے گئے لنکس پر کلک کیجئے۔

ہمارے بارے میں   |   ضابطہ اخلاق   |   اشتہارات   |   ہم سے رابطہ کیجئے
 
© 2019 All Rights of Publications are Reserved by Aksriyat.
Developed by: SuperWebz.com
تمام مواد کے جملہ حقوق محفوظ ہیں © 2019 اکثریت۔